صوفی گلوکارہ صنم ماروی بائیو گرافی

صنم ماروی کا شمار پاکستان کے ان صوفی گلوکاروں میں ہوتا ہے. جنہوں نے محنت کر کے اپنا نام بنایا. اور اپنی پہچان بنائی. گلوکارہ صنم ماروی کا شمار پاکستانی فولک اور صوفی گلوکاروں میں ہوتا ہے. جو سندھی، پنچابی اور بلوچی زبانوں میں ماہر ہیں
صنم ماروی حیدر آباد کی ایک سندھی فیملی میں 17 اپریل 1986 کو پیدا ہوئی. ان کے والد کا نام فقیر غلام رسول ہے. جو سندھی فیملی سے تعلق رکھتے ہیں. اور خود بھی ایک صوفی گلوکار ہیں. انہوں نے اپنے والد سے ہی گلوکاری سیکھی. جب ان کی عمر سات برس تھی. صنم ماروی کے آٹھ بہن بھائی ہیں
سات سال کی عمر سے گلوکاری سیکھنے والی صنم ماروی آج ایک خاص مقام رکھے ہوئے ہیں. انہوں نے اپنی ابتدائی دو سالوں کی تعلیم استاد نصرت فتح علی خان سے سیکھی. اس کے علاوہ عابدہ پروین سے بھی انہوں نے بہت کچھ سیکھا. اور ان سے متاثر ہوئی
صنم ماروی 2009 میں پاکستان ٹیلی ویژن کے پروگرام ورثہ میں بھی نامزد ہوئی. اس کے بعد انہوں نے کوک اسٹوڈیو میں بھی اپنی گلوکاری کے جوہر دکھائے. اور مداحوں کی داد وصول کی. صنم ماروی کا شمار بہترین صوفی گلوکارہ میں ہوتا ہے. جنہوں نے دنیا بھر میں ہونے والے صوفی پروگرام میں وقتاً فوقتاً شرکت کی. انہوں نے بھارتی گلوکارہ ریکھا کے ساتھ بھی پرفارم کیا ہے
سال 2012 میں صنم ماروی نے لندن، پیرس، نیویارک میں معروف گلوکارہ حدیقہ کیانی اور علی ظفر کے ساتھ مل کر لائیو پرفارمنس دی تھی. صنم ماروی ڈراموں کے او ایس ٹی بھی گا چکی ہیں. جن میں ڈرامہ پیا بے دردی اور بچے برائے فروخت شامل ہیں
صنم ماروی نے بہترین گلوکارہ کا ایوارڈ حاصل کیا. 2012 میں لائٹ میوزک کی بہترین اداکارہ کا بھی ایوارڈ حاصل کیا. اس کے علاوہ انہوں نے یونیسکو ایوارڈ بھی حاصل کیا. صنم ماروی نصرت فتح علی خان کے بعد یہ ایوارڈ حاصل کرنے والی دوسری شخصیت ہیں
صنم ماروی نے حمید علی خان کے ساتھ شادی کی. اور ان کے تین بچے ہیں. لیکن حال ہی میں انہوں نے اپنے شوہر حمید علی خان سے خُلع لے لیا

اپنا تبصرہ بھیجیں