عید تو گزر گئی لیکن گوشت باقی رہ گیا ، گوشت کھائیں لیکن کم

بڑی عید کا نام ذہن میں آتے ہی نت نئے کھانوں کا خیال آ‌جاتا ہے . عید الاضحیٰ پر گوشت کے نت نئے پکوان نہ کھائے جائیں ایسا تو ممکن نہیں لیکن ٹھہریے ،کیا آپ جانتے ہیں کہ ایک فرد کو دن کے24 گھنٹوں میں صرف آدھا سے ایک پاؤ گوشت ہی کھانا چاہیے، زیادہ گوشت کھانے سے بہت سے سنگین مسائل جنم لےسکتے ہیں۔
طبی ماہرین کہتے ہیں کہ عیدالاضحیٰ پر گوشت ضرور کھائیں لیکن ہاتھ ذرا ہلکا رکھیں۔ ایک ہی وقت میں زیادہ مقدار میں گوشت مت کھائیں .اور اپنی صحت کا خیال رکھیں.
عید تو اب گزر گئی لیکن قربانی کے بعد اپنے علاقے اور محلے کو بھی صاف رکھیں . قربانی کے بعد جانوروں کی آلائشیں گلی محلے میں نہیں بلکہ کچراکنڈی میں پہنچائیں اور صفائی کا خاص خیال رکھیں ورنہ مچھروں اور مکھیوں کی بہتات سے متعدد امراض پھوٹ سکتے ہیں۔
ماہرین طب کے مطابق قربانی کے گوشت میں چکنائی زیادہ ہوتی ہے اس لیے ذیابیطس،ہائی بلڈ پریشر سمیت دل کے امراض میں مبتلا افراد کو خاص احتیاط کرنی چاہیے. اس کے علاوہ قربانی کے گوشت کو فوری نہیں پکانا چاہیے۔ گوشت کو ایک دو گھنٹے رکھیں پھر ہنڈیا چڑھائیں۔ جب گوشت اچھی طرح گل جائے تو اسے خوب چبا چبا کر کھائیں۔

کیٹاگری میں : صحت

اپنا تبصرہ بھیجیں