کراچی کی شیر شاہ کباڑ مارکیٹ میں پھینکے گئے بے کا رسامان سے سونا اور دیگر دھات برآمد

جس سامان کو لوگ کباڑ میں پھینک دیتے ہیں کچھ قدردان اس میں سے سونا بی نکالتے ہیں۔ ملک کی سب سے بڑی شیر شاہ کباڑی مارکیٹ کے محنت کش ٹین ڈبے والے کو بیچے گئے سامان سے سونا، چاندی نکال رہے ہیں۔

ان کا کہنا ہے کہ کوئی چیز بےکار نہیں، شیر شاہ کباڑ مارکیٹ میں تو حقیقت میں کوئی چیز بے کار نہیں، یہاں سستے داموں میں بیچے گئَے سامان سے کچھ اور نہیں سونا چاندی نکالا جا رہا ہے، یہاں کے کچھ کاریگر بہت محنت سے پرانے کمپیوٹرز کی چپس اور آلات سے سونا، چاندی، پلاڈیم اور تانبا نکال رہےہیں۔ لیکن یہ کام آسان نہیں اور محنت طلب ہے، خصوصاً گرم موسم میں آگ اور گرمی کے سبب، پھر ایسی باریک بینی ہر کسی کے بس کی بات نہیں، لیکن اس کام کا پھل بھی خوب ہے۔

ملک کی مشہور شیر شاہ کباڑی مارکیٹ میں پھینکے گئے سامان سے صرف سونا، چاندی اور تانبا ہی نہیں دیگر کارآمد سامان بھی نکالا جاتا ہے اور یوں ریسائکلنگ کے اس کام سے سیکڑوں افراد کا روزگار چل رہا ہے۔

ماہرین کہتے ہیں کہ دھاتوں کے ساتھ کام کرتے وقت احتیاطی تدابیر اختیار کرنا بہت ضروری ہے۔ تاکہ کسی بھی بڑے نقصان سے بچا جا سکے

اپنا تبصرہ بھیجیں