موٹروے زیادتی کیس کا مرکزی ملزم عابد اب تک پولیس کی پہنچ سے دور

موٹروے زیادتی کیس کا مرکزی ملزم عابد ایک مرتبہ پھر پولیس کو چکما دے کر فرار ہو گیا۔ اور اب تک پولیس اس کو گرفتار نہ کر سکی
موٹروے زیادتی کیس کو 25 روز گزرنے کے باوجود بھی پولیس مرکزی ملزم عابد کو گرفتار نہیں کر سکی ، اور پولیس ملزم کو گرفتار کرنے کی بجائے تبادلوں میں پڑگئی جب کہ 10 روز سے تحقیقاتی ٹیم کا اجلاس تک نہیں ہوسکا ہے۔
پولیس نے عابد کی گرفتاری کے لیے پھر ننکانہ صاحب میں چھاپہ مارا جہاں ملزم اپنی سالی سے ملنے آیا تھا لیکن خاتون نے محلے داروں کی مدد سے پولیس کواطلاع کی۔ پولیس کے پہنچنے پر ملزم عابد اہلکاروں کو دیکھتے ہی قبرستان کے راستے فرار ہوا۔

اس سے قبل بھی پولیس اور عابد کا چار مرتبہ آمنا سامنا ہو چکا ہے لیکن پولیس انتہائی قریب ہونے کے باوجود ملزم کو نہ پکڑ سکی۔ وقت گزرنے کے ساتھ افسروں کی کیس میں دلچسپی بھی کم ہونے لگی ہے اور پولیس حکام اختیارات کے تنازعات میں الجھ گئے ہیں
10 روز سے تحقیقاتی ٹیم کا اجلاس نہ ہونے کی وجہ سے تفتیش کے تقاضے بھی مکمل نہ ہو سکے. اور یہ کیس التوا کا شکار ہوتا جا رہا ہے

اپنا تبصرہ بھیجیں