25 ہزار کے پرائز بانڈز ختم کرنے کافیصلہ

حکومت پاکستان نے ایف اے ٹی ایف کی ایک اور شرط پوری کرنے کا فیصلہ کر لیا۔
تفصیلات کے مطابق حکومت نے فناشنل ایکشن ٹاسک فورس (ایف اے ٹی ایف) کی ایک اور شرط پوری کرنے کا فیصلہ کرتے ہوئے 40 ہزار کے بعد اب 25 ہزار کے انعامی بانڈز بھی ختم کرنے پر غور شروع کر دیا ہے۔

ذرایع کا کہنا ہے کہ پہلے مرحلے میں 25 ہزار کے انعامی بانڈ کو پرائم بانڈ میں تبدیل کیا جائے گا، اس سلسلے میں انعامی بانڈ کی رجسٹریشن کا آغاز رواں ماہ کے آخر میں ہوگا۔

ذرایع کے مطابق 25 ہزار کے بعد 15 ہزار اور ساڑھے 7 ہزار کے انعامی بانڈز کی رجسٹریشن ہوگی، انعامی بانڈ فروخت کرتے وقت اسٹیٹ بینک کو بھی لازمی آگاہ کرنا ہوگا۔
25 ہزار کے انعامی بانڈز کے لیے شناختی کارڈ کی شرط بھی رکھ دی گئی ہے، دیگر انعامی بانڈز کی رقم بھی اب کیش نہیں ملےگی، ذرایع کا کہنا ہے کہ قرعہ اندازی میں نکلنے والا انعامی بانڈ بھی اسٹیٹ بینک میں جمع کرانا ہوگا۔

انعامی رقم کے لیے بھی قومی شناختی کارڈ نمبر اور اسٹیٹ بینک فارم پر کرنا ہوگا۔

یاد رہے کہ اسٹیٹ بینک آف پاکستان نے 40 ہزار والے بانڈز رواں برس مارچ میں ختم کر دیے تھے، چالیس ہزار مالیت والے پرائز بانڈ کی مالی حیثیت یکم اپریل سے ختم ہو گئی ہے۔ یہ اقدام کالے دھن سے بانڈز کی خریداری کرنے والوں کے خلاف گھیرا تنگ کرنے اور معیشت کو دستاویزی بنانے کی خاطر کیا گیا تھا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں