سعودی حکومت کی جانب سے سعودیہ کے اپنے شہریوں پر بھی عمرہ ادائیگی کی پابندی

چین سے پھیلنے والے مہلک وائرس کی وجہ سے پہلے سعودی ایئر لائن نے دوسرے ممالک سے عمرہ پر آنے والوں کے لیے پابندی عائد کی تھی. لیکن اب اس وائرس کے ہر جگہ پھیلنے کی وجہ سے سعودی حکومت نے اپنے شہریوں اور وہاں مقیم غیرملکی افراد کے بھی عمرہ ادائیگی پر عارضی طور پر پابندی عائد کردی ہے
گزشتہ دنوں مشرق وسطیٰ میں کورونا وائرس سے ہلاکتوں کے بعد سعودی عرب نے متاثرہ ملکوں کے عمرہ زائرین پرمکہ مکرمہ اور مسجد نبویﷺ میں داخلے پرپابندی عائد کردی تھی جس کے بعد ہزاروں افراد کے ویزے منسوخ کیے گئے تھے۔
گزشتہ دنوں سعودی عرب میں بھی کورونا وائرس کے پہلے مریض کی تصدیق ہوئی تھی جس کے بعد اب سعودی عرب نے مقامی افراد کے بھی عمرہ ادائیگی پر پابندی عائد کردی ہے۔
سعودی وزارت داخلہ کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ سعودی عرب کے اپنے شہریوں پر عمرہ نہ کرنے کی یہ پابندی عارضی ہے. جو کہ کورونا وائرس کے پھیلاؤ کے روک تھام کے لیے تشکیل کردہ خصوصی کمیٹی کی سفارش پرعائد کی گئی ہے. جیسے ہی صورتحال بہتر ہو گی یہ پابندی ختم کر دی جائے گی
سعودی وزارت خارجہ کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ سعودی شہریوں اور مملکت میں رہائش پذیر افراد کی مسجد نبوی ﷺ آمد پر بھی پابندی لگادی گئی ہے
سعودی عرب میں اس وائرس سے متاثر ایک فرد کی حالت اب بہتر ہے. جبکہ
متاثرہ مریض سے ملنے والے 70 افراد کی بھی نشاندہی کردی گئی ہے جن کے نمونے بھی حاصل کرلیے گئے ہیں اور انہیں علیحدہ رکھا گیا ہے۔
خیال رہے کہ کورونا وائرس سے متاثرہ سعودی شہری ایران سے بذریعہ بحرین سعودی عرب میں داخل ہوا تھا اور کئی روز بعد اس میں وائرس کی تصدیق ہوئی تھی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں