سعودیہ میں شدید بارشوں‌ سے سیلاب کا خطرہ

سعودی محکمہ شہری دفاع نے شدید بارشوں کے پیش نظر سیلابی صورتحال کا خدشہ ظاہر کیا ہے
عرب میڈیا کے مطابق سعودی محکمہ شہری دفاع نے مکہ سمیت دیگر علاقوں کے لیے موسم کی صورتحال سے متعلق وارننگ جاری کی ہے جس میں بدھ تک خراب موسم کی پیشگوئی کی گئی ہے۔
جنرل ڈائریکٹوریٹ شہری دفاع کی جانب سے گرج چمک، کم حدِ نگاہ اور بارش سمیت سیلابی صورتحال کی وارننگ جاری کی گئی ہے۔

محکمہ شہری دفاع کے مطابق عصیر، جازان، البہا اور مکہ میں تیز ہواؤں کے ساتھ شدید اور درمیانی درجے کی بارش متوقع ہے جس سے کچھ علاقوں میں سیلابی صورتحال کا بھی امکان ہے۔
محکمہ شہری دفاع کا کہنا ہےکہ مدینے میں بھی تیز ہوائیں اور درمیانی درجے کی بارش ہوگی جب کہ مشرقی صوبے میں رات اور صبح کے اوقات میں دھند چھائے رہنے کا امکان ہے۔
حکام نے بارشوں اور سیلابی صورتحال کے خدشے کے پیش نظر شہریوں کو گھروں میں رہنے کی ہدایت کی ہے۔ تاکہ کسی کو ان حالات میں‌مشکل کا سامنا نہ کرنا پڑے

جبکہ دوسری جانب کورونا کے باعث گزشتہ 7 ماہ سے عمرہ کی ادائیگی نہیں‌ہو رہی . جس کا کل سے آغاز ہو گیا ہے.عمرے کے لیے ایس او پیز پر عمل کرنا لازم ہو گا اور پہلے مرحلے میں روزانہ 6 ہزار عمرہ زائرین کو مسجد الحرام جانے کی اجازت دی جائے گی
جبکہ 18 اکتوبر سے روزانہ 15 ہزار عمرہ زائرین اور 40 ہزار افراد مسجد الحرام میں نماز ادا کر سکیں گے۔
عرب میڈیا کے مطابق زائرین کو ایک بار عمرہ کرنے کے بعد دوسرا عمرہ کرنے کے لیے لازمی طور پر 14 روز کا وقفہ لینا ہوگا تاکہ اس دوران کورونا وائرس سے بچاؤ کے لیے ضروری اقدامات کے تحت دوسرے افراد کو عمرے کی ادائیگی کا موقع مل سکے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں