کیا آپ اپنی روزمرہ کی خوراک میں پروٹین کا استعمال کر رہے ہیں؟

ہماری روزمرہ کی خوراک میں پروٹین کا ہونا ضروری ہے. پروٹین کی مناسب مقدار ہمارے جسم کو چاق و چوبند اور توانا رکھتی ہے. اور صحت کے لیے بہترین سمجھی جاتی ہے
ماہرینِ صحت کے مطابق پروٹین ہمارے میٹابولزم کو مضبوط کرتے ہیں جب کہ یہ ہڈیوں، پٹھوں، ناخن اور بالوں کے لیے بھی بہترین سمجھے جاتے ہیں۔
پروٹین کی کمی سے جسم میں کون کون سے اثرات مرتب ہو سکتے ہیں. آئیے اس کا جائزہ لیتے ہیں
ماہرینِ صحت کے مطابق اگر آپ اپنی روزمرہ کی خوراک میں پروٹین کی اتنی مقدار نہیں لے رہے جتنی ہمارے جسم کو ضرورت ہوتی ہے تو اس کمی کی وجہ سے اکثر اوقات ہمارے پاؤں اور ہاتھوں میں سوجن محسوس ہونے لگتی ہے۔
اگر آپ ایسی خوراک کا استعمال کر رہے ہیں جس سے آپ کے جسم میں پروٹین کی مقدار پوری نہیں ہو رہی تو اس کی وجہ سے آپ کے پٹھے بھی متاثر ہونے لگتے ہیں۔ پروٹین جسم میں ٹشو اور پٹھوں کی صحت کے لیے بے حد اہم کردار ادا کرتے ہیں
پروٹین کو بالوں، جلد اور ناخن کے لیے ایک اہم جُز سمجھا جاتا ہے، اگر آپ کے جسم میں پروٹین کی کمی ہوجائے گی تو اس سے آپ کے ناخن، بال اور جلد کھردرے اور خشک ہوجائے گی. پروٹین کی کمی کی وجہ سے ہمارے جسم میں تھکاوٹ رہتی ہے. اور جسم پر بوجھ محسوس ہوتا ہے
ماہرینِ صحت کے مطابق بال گرنے کا تعلق بھی پروٹین کی کمی کی وجہ سے ہوسکتا ہے۔
پروٹین کو جسم کا ایندھن بھی کہا جاتا ہے، اگر آپ دن بھر پروٹین کی کم مقدار لیں گے تو اس کی وجہ سے آپ کو زیادہ بھوک محسوس ہونے لگے گی۔
روزمرہ کی خوراک میں پروٹین کی مقدار آپ کے مزاج کو بھی متاثر کر سکتی ہے اور اگر آپ کم مقدار میں پروٹین لے رہے ہوں گے تو اس وجہ سے آپ اکثر غصہ یا اداس ہوسکتے ہیں۔
پروٹین کن غذاؤں میں وافر مقدار میں پایا جاتا ہے؟
گوشت، دودھ، دہی، انڈے، دالیں، مچھلی ایسی غذائیں ہیں. جس میں پروٹین کی وافر مقدار موجود ہوتی ہے.

نوٹ: یہ معلومات مختلف انٹرنیشنل جرنلز میں شائع شدہ تحقیقات سے حاصل کی گئی ہیں۔ اگر آپ کسی الرجی یا بیماری میں مبتلا ہیں تو اپنے معالج سے ضرور مشورہ کریں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں