سانحہ مچھ میں شہید کان کنوں کی نماز جنازہ ادا کردی گئی

سانحہ مچھ میں شہید کان کنوں کی نماز جنازہ ادا کردی گئی۔ کوئٹہ کے ہزارہ ٹاؤن میں علامہ ہاشم موسوی نے شہدا کی نمازہ جنازہ پڑھائی جس میں لوگوں کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔
اس کے علاوہ ڈپٹی اسپیکر قومی اسمبلی قاسم سوری، معاون خصوصی ذلفی بخاری، وفاقی وزیر علی زیدی اور دیگر نے بھی نماز جنازہ میں شرکت کی۔
ایم ڈبلیو ایم کے رہنما علامہ ناصر عباس شیرازی کا کہنا ہےکہ ہزارہ ٹاؤن کے قبرستان میں 10 قبریں کھودی گئی اور تمام میتوں کی تدفین یہیں پر کی جائے گی، تمام میتوں کےشرعی وارث یہیں ہیں۔
تین جنوری کے روز بلوچستان کے علاقے مچھ میں 11 کان کنوں کو کوئلہ فیلڈ میں مسلح افراد نے قتل کیا تھا جس کے بعد ان کے ورثا نے میتوں کے ہمراہ کوئٹہ میں 6 روز دھرنا دیا اور وزیراعظم کی آمد کا مطالبہ کیا۔ سانحے پر کراچی اور لاہور سمیت مختلف شہروں میں بھی دھرنے دیے گئے، کراچی میں 30 سے زائد مقامات پر دھرنے دیے گئے جس سے شہر میں ٹریفک کا نظام بری طرح متاثر ہوا اور فلائٹ آپریشن متاثر ہونے سے پروازیں بھی تاخیر کا شکار ہوئیں۔ یہ دھرنے ان سے اظہار یکجہتی کے لیے کراچی سمیت لاہور، اسلام آباد، پشاور اور دیگر شہروں میں بھی دھرنے دیے جارہے تھے. مجلس وحدت المسلمین نے شہر کے تمام مقامات پر جاری دھرنے ختم کرنے کا اعلان کیا جس کے بعد نمائش چورنگی پر مرکزی دھرنے کے شرکا پر امن طور پر واپس جانا شروع ہوگئے جب کہ شہر کے دیگر علاقوں میں بھی دھرنے ختم کردیے گئے۔
دوسری جانب لاہور، اسلام آباد، پشاور اور دیگر شہروں میں بھی دھرنے ختم کرنے کا اعلان کردیا گیا ہے۔
حکومتی مذاکراتی ٹیم اور دھرنے کے شرکا میں گزشتہ رات مذاکرات کامیاب ہونے کے بعد لواحقین نے میتیں دفنانےپر آمادگی ظاہر کی۔
وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان، وفاقی وزیر علی زیدی، ڈپٹی اسپیکر قومی اسمبلی قاسم سوری اور وزیراعظم کے معاون خصوصی ذلفی بخاری نے دھرنے کے شرکا سے ایک بار پھر مذاکرات کیے جس کے بعد لواحقین نے 6 روز کے دھرنے کےبعد میتوں کی تدفین پر رضا مندی ظاہر کردی۔
اس موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئےعلی زیدی نے کہا کہ جو مطالبات ہمارے سامنے رکھے گئے وہ مشکل تھے، جن افسران کو ہٹانا تھا فیصلہ ہوچکا، شہدا ایکشن کمیٹی سے ہمارا تحریری معاہدہ ہوچکا، کبھی کسی حکومت نے ماضی میں تحریری معاہدہ نہیں کیا۔
وفاقی وزیر علی زیدی نے شہدا کے لواحقین میں سے طالب علموں کے لیے اپنی وزارت کی جانب سے اسکالر شپ دینے کا اعلان کیا۔
اس موقع پر وزیراعلیٰ بلوچستان نے تدفین پر رضا مندی ظاہر کرنے پر شہدا کے لواحقین کا شکریہ ادا کیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں