دونوں ہاتھوں سے محروم لیکن اسنوکر کھیلنے میں کسی سے کم نہیں

سوشل میڈیا پر ان دنوں پاکستانی اسنوکر پلیئر کی دھوم مچی ہوئی ہے جو کہ پیدائشی طور پر دونوں ہاتھوں سے محروم ہے۔ 32 سالہ محمد اکرام پیدائش سے ہی دونوں ہاتھوں سے محروم ہیں لیکن اسنوکر کی ٹیبل پر ان کے کیا ہی کہنے ہیں‌. وہ کسی بھی بڑے سنوکر پلیئر سے کم نہیں‌ ہیں‌
محمد اکرام کیو بال کو اپنی ٹھوڑی سے اس مہارت سے ہٹ کرتے ہیں کہ گیند پاکٹ میں جاکر ہی دم لیتی ہے۔
اکرام کا کہنا ہے کہ یہ ایک مشکل کام ہے، بہت محنت سے یہ مہارت حاصل کی ہے، اگر کوئی کھلاڑی مجھ جیسا ہے تو میں اس کا سامنا کرنے کیلئے تیار ہوں۔

اکرام کے مطابق بچپن میں اس نے اسنوکر دیکھنا شروع کیا اور پھر اس میں کھیلنے کا بھی شوق پیدا ہوا اور اس نے چوری چھپے پریکٹس شروع کردی۔
شروع میں اکرام خالی ٹیبل پر اکیلے پریکٹس کرتا تھا تاہم وقت کے ساتھ ساتھ اس نے دوسرے کھلاڑیوں کے خلاف میچز کھیلنا شروع کردیے اور اب وہ اتنا ماہر ہوگیا ہے کہ علاقے کے بہترین سے بہترین کھلاڑی کو بھی چیلنج کرسکتا ہے۔

اکرام کے گھر والوں کو خطرہ تھا کہ اس طرح اس کی ٹھوڑی زخمی ہوسکتی ہے لہٰذا انہوں نے کئی سال تک اسے کھیل سے دور رکھا تاہم گزشتہ برس انہوں نے اکرام کو کھیلنے کی اجازت دے دی۔
اکرام کی مہارت نے اسے سوشل میڈیا پر اسنوکر کھیلنے اور پسند کرنے والوں میں بے حد مقبول کردیا تاہم اکرام کا کہنا ہے کہ اسے سوشل میڈیا کے بارے میں زیادہ کچھ نہیں معلوم۔

اپنا تبصرہ بھیجیں