پنجاب میں لاک ڈاؤن ختم ، نوٹیفکیشن جاری

حکومت پنجاب نے صوبے میں لاک ڈاؤن کے خاتمے کا پہلے اولان کیا اور اب باقاعدہ نوٹیفکیشن بھی جاری کر دیا۔ جس کے مطابق آج سے صوبے میں لاک ڈاؤن کے اصول لاگو نہیں‌ہو گے.
تفصیلات کے مطابق این سی او سی اور وزیر اعلیٰ پنجاب کی ہدایت پر سیکریٹری پرائمری اینڈ سیکنڈری ہیلتھ کئیر نے صوبے میں لاک ڈاؤن کے خاتمے کا باقاعدہ نوٹیفکیشن جاری کر دیا۔
سیکریٹری پرائمری اینڈ سیکنڈری ہیلتھ کئیر کیپٹن (ر) محمد عثمان کا کہنا ہے کہ شادی ہالز کے علاوہ صوبے میں تمام کاروباری مراکز آج سے کھول دیے گئے ہیں۔
محمد عثمان کا کہنا تھا کہ سب کچھ کھولنے کی اجازت تو دے دی گئی ہے لیکن مذہبی اجتماعات متعلقہ انتظامیہ کی اجازت اور ایس او پیز پر عمل درآمد سے مشروط ہوں گے، تمام کاروباری مراکز بھی ایس او پیز پر عمل درآمد کرنے کے پابند ہوں گے۔
نوٹیفکیشن کے مطابق آج سے تمام قسم کی پبلک ٹرانسپورٹ معمول کے مطابق چل سکے گی، جب کہ کاروبار کے اوقات کار اور ہفتہ وار چھٹیاں کرونا وائرس سے پہلے والے معمول کے مطابق ہوں گی۔
سیکریٹری محمد عثمان کا یہ بھی کہنا تھا کہ خطرہ ابھی ٹلا نہیں، عوام سے گزارش ہے کہ احتیاط کا دامن ہاتھ سے نہ چھوڑیں۔ ایس او پیز پر عمل کریں
دوسرئ جانب پنجاب حکومت نے تھیٹرز اور سینما ہالز کھولنے کی اجازت دے دی، تھیٹرز اور سینما ہالز کے لیے ایس او پیز پر عمل درآمد کیلئے نوٹی فکیشن جاری کردیا گیا ہے۔
جس کے مطابق ماسک پہنے بغیر افراد کا داخلہ سختی سے سینیما میں بند کیا جائے گا، سیکرٹری پرائمری اینڈ سیکنڈری ہیلتھ کیئر نے نوٹی فکیشن جاری کر دیا، بار بار زیر استعمال کرسیوں، میزوں،ڈور ہینڈلز اوردیگر اشیا کو چھونےسے گریز کی ہدایت کی گئی ہے۔
کسٹمرز اور ملازمین کے لیے ہیڈ سینیٹائزراور ماسک کی فراہمی یقینی بنانے کا کہا گیا ہے . تھیٹر یا سینما ہال میں گنجائش سے 40 فیصد کسٹمرز کو آنے کی اجازت دی جائے۔
نوٹی فکیشن کے مطابق سینما اور تھیٹر کے ہالز، گیلری، واش رومز اور کیفے ٹیریا کی صفائی اور جراثیم کش اسپرے کو یقینی بنایا جائے گا، دروازوں کے ہینڈلز، سیڑھیاں اور برقی بورڈ بھی ہر شو کے بعد صاف رکھے جائیں گے۔ شائقین کے بیٹھنے میں ایک میٹر کا فاصلہ رکھوایا جائے گا۔

شائقین کے ہالزمیں داخلے سے پہلے انکی مکمل سکیننگ کی جائے گی، فیس ماسک کے بغیر کسی کو سینما ہال یا تھیٹرمیں داخلے کی اجازت نہیں ہوگی، ایس او پیز کے تحت فیملی ممبرز اور دوستوں کو کسی ایک جگہ مجمع لگانے کی اجازت نہیں ہوگی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں