نوازشریف کے ذاتی معالج ڈاکٹر عدنان پر دو نقاب پوش افراد کا حملہ، ڈاکٹر عدنان بری طرح زخمی

لندن میں زیرعلاج سابق وزیراعظم اور مسلم لیگ (ن) کے قائد نوازشریف کے ذاتی معالج ڈاکٹر عدنان پر حملہ کیا گیا۔

ترجمان شریف فیملی کے مطابق لندن کے علاقے پارک لین میں دونقاب پوشوں نے ڈاکٹر عدنان پردھاتی راڈ سے حملہ کیا جس سے وہ شدید زخمی ہو گئے. ذرائع کے مطابق

ڈاکٹرعدنان کےسر، چہرے اور سینے پر چوٹیں آئی ہیں جنہیں فوری طور پر اسپتال منتقل کردیا ہے
ترجمان کے مطابق ڈاکٹر عدنان کو حملے سے پہلے متعدد بار ایسی کال وصول ہوئی ہیں. جس میں ان کو دھمکیاں دی جارہی تھی. جو پولیس کو ثبوت کے طور پر دی گئی ہیں

ترجمان شریف فیملی نے ڈاکٹر عدنان پر ہونے والے حملے کی سخت مذمت کرتے ہوئے کہا کہ اس قسم کے حملوں کا جواب قانونی دائرے میں رہ کر دینےکا حق رکھتے ہیں۔

لندن پولیس کا کہنا ہے کہ ڈاکٹر عدنان پر حملے سے متعلق شکایت موصول ہوگئی جس پر تحقیقات کا آغاز کردیا گیا ہے۔ اور اس میں ملوث لوگوں کو جلد پکڑنےکی بھی یقین دہانی کروائی گئی ہے
شہباز شریف کی طرف سے اس حملے کی شدید مذمت کی گئی ہے اور کہا گیا کہ یہ حملہ ایک سوچی سمجھی سازش کے تحت کیا گیا. واقعے میں ملوث لوگوں سے پوچھ گچھ ضرور ہو گی
سابق وزیراعظم نواز شریف 19 نومبر 2019 سے علاج کی غرض سے لندن میں مقیم ہیں جہاں ان کا علاج اور ٹیسٹ کیے جا رہے ہیں. اسی حوالے سے ان کے ذاتی معالج بھی ان کے ہمراہ ہیں.

اپنا تبصرہ بھیجیں