پاکستان میں ادویات کے حوالے سے بڑی پیش رفت

ادویات کا معیار جانچنے کے لیے پاکستان کی پہلی نجی ٹیسٹنگ لیبارٹری اسلام آباد میں قائم کر دی گئی ہے. جس کا کام یہ ہو گا کہ وہ اس بات کی تحقیق کرے کہ دوا جو مارکیٹ میں استعمال ہو رہی ہے . اصل ہے یا جعلی اور اس کا معیار کیا ہے؟
پہلے صرف سرکاری سطح پر یہ جانچا جاتا تھا لیکن اب اسلام آباد میں عالمی معیار کی پہلی نجی لیبارٹری قائم کی گئی ہے جہاں ادویات کے معیار کی جانچ مکمل غیر جانبدارانہ ہوگی۔
اس لیب کو عالمی اداروں کا بھروسہ اور اعتماد بھی حاصل ہے اور یہ عالمی ادارہ صحت سے منظور شدہ ہے۔
سی او او ڈرگ لیب ڈاکٹر امبرین کا کہنا ہے کہ ہماری کوشش ہے کہ ہم پاکستان میں ٹیسٹنگ کرسکیں تاکہ کوالٹی ڈرگز میسر ہوں۔
پاکستان کی پہلی نجی ڈرگ ٹیسٹنگ لیب میں آلات جرمنی اور جاپان سے درآمد کیے گئے ہیں اور ادویات اور ان کے اجزاء کی جانچ برطانوی اور امریکی ڈرگ اتھارٹیز کے قواعد و ضوابط کے تحت کی جا رہی ہے۔
یہاں صرف پاکستان ہی نہیں بلکہ دنیا کے مختلف ممالک کو بھی اپنی ادویات کا معیار چیک کرانے کی سہولت فراہم کی جارہی ہے ۔

پاکستان کی پہلی نجی ڈرگ ٹیسٹنگ لیب کے قیام سے ملکی ڈرگ ایکسپورٹرز اور امپورٹرز کو بھی فائدہ ہوگا جنہیں ادویات بیرون ملک بھجوانے یا منگوانے سے پہلے دیگر ممالک کی ڈرگ لیبارٹریز سے ان کے معیاری ہونے کا سرٹیفکیٹ لینا پڑتا تھا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں