سندھ حکومت نے 15 روز قبل بیرون ملک سے آنے والے بچوں کا اسکول میں داخلہ ممنوع کر دیا ہے

کورونا وائرس پھیلنے کے خطرے کے پیش نظر محکمہ صحت سندھ نے تعلیمی ادارروں کے لیے ہیلتھ ایڈوائزری جاری کردی۔ اب جبکہ تعلیمی اداروں کے کھلنے میں چند دن باقی رہ گئے ہیں. اس حوالے سے سندھ حکومت نے نئی حکمت عملی تیار کی ہے. جس کے مطابق ان بچوں کو اسکول نہیں آنے دیا جائے گا. جو 15 یا 20 روز قبل بیرون ملک سے آئے. اس کے علاوہ وہ بچے جن کے رشتے دار یا قریبی دوست بیرون ملک کا سفر کر کے آئے ہوں. وہ بچے بھی اسکول نہیں آئیں گے

سندھ حکومت کی طرف سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ کوئی بھی طالبعلم یا اسٹاف کا عملہ جس میں وائرس کی علامات موجود ہوں. تو ان کا اسکول میں داخلہ منع ہے جب کہ سانس کے امراض میں مبتلا افراد بھی اسکول میں داخل نہیں ہوسکتے. اسکول آنے والے بچوں کاہجوم والی جگہوں پر بیٹھنا منع ہو گا. کلاس میں طلبہ ایک دوسرے سے 3 فٹ کے فاصلے پر بیٹھیں گے. اور صابن، سینیٹائزرز اور پانی کا زیادہ سے زیادہ استعمال کریں گے.اس حوالے سے تعلیمی اداروں میں ہیلتھ ڈیسک کا قیام کیا جائے گا. جو یہ سب معاملات دیکھے گا. اور جو نئے احکامات سندھ حکومت کی طرف سے جاری کیے گئے ہیں. ان. پر عمل کو یقینی بنایا جائے گا

سندھ حکومت نے فی الحال صوبے بھر میں تعلیمی ادارے 16 مارچ سے ہی کھولنے کا اعلان کیا ہے۔ اس میں کسی قسم کی تاخیر یا تبدیلی کا فیصلہ نہیں کیا گیا

اپنا تبصرہ بھیجیں