بذریعہ قرعہ اندازی 86 ہزار 765 افراد سرکاری حج اسکیم کے تحت حج کرنے جائیں گے

گزشتہ روز ہونے والی سرکاری حج اسکیم کے تحت 86 ہزار 765 افراد حج کے لیے جائیں گے. ان تمام افراد کا نام بذریعہ قرعہ اندازی نکلا ہے. جو اس سال حج کی سعادت نصیب کریں گے

اسلام آباد میں سرکاری حج اسکیم کے تحت جمع درخواستوں کی قرعہ اندازی کی تقریب ہوئی۔ جس میں کل 14 لاکھ 9 ہزار 295 افراد نے درخواستیں دائر کی. اور ان میں سے صرف 86 ہزار 765 افراد قرعہ اندازی کے ذریعے منتخب ہوئے. جن افراد کے نام قرعہ اندازی میں نہیں نکل سکے. ان کو آج سے اپنی جمع کروائی گئی رقم ملنا شروع ہو جائے گی
تفصیلات کے مطابق اس حج اسکیم میں ان افراد کو ملخوط نظر رکھا گیا ہے. جو 3 سال سے اسکیم میں ناکام ہو رہے تھے. ایسے ساڑھے سات ہزار افراد کو اسکیم میں منتخب کیا گیا. اس کے علاوہ 70 سال سے زائد افراد کو بھی منتخب کیا گیا. جن کی تعداد 10 ہزار ہے. اس کے علاوہ ایک ہزار بیرون ملک رہنے والے پاکستانیوں کو اس اسکیم میں بغیر قرعہ اندازی کے منتخب کیا گیا

اس موقع پر وزیر مذہبی امور کا کہنا تھا کہ کورونا وائرس کے باوجود سعودی حکومت نے حج انتظامات جاری رکھنے کا کہا ہے البتہ اس حوالے سے مستقبل میں کوئی فیصلہ ہوا تو ایک لاکھ سے زائد کوٹہ والے ممالک کو مشاورت میں شامل کرکے کیا جائے گا

ان کا مزید کہنا تھا کہ سرکاری حج کوٹہ ایک لاکھ 5 ہزار 413 افراد کا تھا، تمام درخواست گزاروں کو نتائج سے بذریعہ ایس ایم ایس آگاہ کردیا جائےگا، قرعہ اندازی میں کامیاب حجاج کو میڈیکل سرٹیفکیٹ 19 مارچ تک جمع کرانا ہوگا۔ وزیر مذہبی امور کا کہنا تھا کہ اس سال حج درخواستیں کم وصول ہوئی جس کی وجہ کورونا وائرس اور مہنگائی ہے

رواں سال سرکاری اسکیم کے تحت پاکستان کے مجموعی حج کوٹے میں سے 60 فیصد سرکاری اور 40 فیصد افراد نجی حج اسکیم کے تحت فریضہ حج ادا کریں گے۔

سعودی حکومت کی جانب سے مختص کوٹے کے مطابق ایک لاکھ 79 ہزار 210 پاکستانی فریضہ حج ادا کریں گے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں