موٹروے زیادتی کیس:‌متاثرہ خاتون نے عابد اور شفقت کی شناخت کر لی

وزیراطلاعات پنجاب فیاض الحسن چوہان نے گجرپورہ زیادتی کیس میں متاثرہ خاتون کی جانب سے عابدعلی سمیت دونوں ملزمان کی شناخت کرنے کی تصدیق کردی اور ساتھ ہی متاثرہ خاتون نے پولیس سے تعاون کی یقین دہانی کرادی ہے۔
متاثرہ خاتون نےعابد علی سمیت دونوں ملزمان کی شناخت کرلی اور پولیس کے ساتھ تعاون کی یقین دہانی بھی کرائی ہے۔
فیاض الحسن چوہان کا کہنا تھا کہ موٹروے زیادتی کیس کی تفتیش مکمل ہوچکی ہے، زیادتی کیس کے 2 مرکزی ملزمان میں سے ایک گرفتار نہیں ہوا ، ملزمان کی بیویاں ، والد اورباقی قریبی لوگ گرفتار ہیں۔

فیاض چوہان نے کہا کہ عوام الناس کو تحفظ فراہم کرنا ہماری حکومت کی اولین ترجیح ہے، اگرکوئی کسی بچے، بچی یا خاتون کو ہراساں کرے تو فوری رابطہ کریں، اگرکسی نے خاتون اور بچوں کوبلیک میل کیا توقانون حرکت میں آئے گا۔

صوبائی وزیر اطلاعات کا کہنا تھا کہ موٹروے زیادتی کیس کی متاثرہ خاتون نے دونوں ملزمان عابد اور شفقت کو پہچان لیا ہے، وقار الحسن کی گرفتاری سے ہی ملزم شفقت تک پہنچنا ممکن ہوا اور وقار الحسن کو مقامی لوگوں نے پولیس کے حوالے کیا، وقار نے سب کچھ بتایا کہ کون کون ملزم ہیں۔

مزید جانیں : موٹروے زیادتی کیس :کئی روز گزر جانے کے باوجود ملزم عابد پولیس کی پہنچ سے دور
پنجاب کی پولیس گجرپورہ واقعہ کے مرکزی ملزم عابد کواب تک گرفتار نہیں کر سکی، عابد کی گرفتاری کے لیے رات گئے قصور میں سرچ آپریشن کیا گیا تاہم پولیس ایک بار پھر ملزم کو گرفتار کرنے میں ناکام رہی۔
پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے مرکزی ملزم عابد علی کی اہلیہ کو حراست میں لے لیا تھا اور اہلیہ بشریٰ سے تفتیش کی جارہی ہے۔ لیکن اہلیہ نے شوہر سے لاعلمی کا اظہار کیا ہے

اپنا تبصرہ بھیجیں