پاک افغان کسٹمز کی مشترکہ کاروائی سے 6 ٹن خطرناک کیمیکل پکڑا گیا

پاکستان کسٹمز اور افغان کسٹم اتھارٹی نے امریکی ادارے کی نگرانی میں افغانستان میں غیر معمولی آپریشن کے دوران چھ میٹرک ٹن خطرناک کیمیکل ضبط کر لیا۔
ضبط شدہ آیوڈین نامی کیمیکل خطرناک منشیات میتھم فیٹامائن بنانے میں استعمال کیا جاتا ہے۔
پاکستان کسٹمز ذرائع کے مطابق یہ شپمنٹ ٹرانزٹ ٹریڈ ایگریمنٹ کے تحت متحدہ عرب امارات سے کراچی پہنچی تھی پھر یہ کنٹینر کراچی سے افغانستان کیلئے بھیجا گیا۔

پاکستان کسٹمز کے پورٹ کنٹرول یونٹ نے شک ہونے کی وجہ سے اس کی خفیہ اطلاع دی جس پر ماڈل کلیکٹریٹ کسٹمز پریونٹیو کراچی نے خفیہ نگرانی کی۔
پاکستان کسٹمز کے حکام نے تصدیق پر امریکی ڈرگ انفورسمنٹ ایڈمنسٹریشن اور افغان حکام کو اعتماد میں لیا۔ شپمنٹ منٹ کراچی سے سڑک کے راستے طورخم بارڈر تک پہنچائے جانے کے دوران خفیہ نگرانی کی گئی۔
پاکستان کسٹمز ذرائع کا کہنا ہے کہ امریکی اور افغان اتھارٹی کو اعتماد میں لے کر 14 ستمبر کو افغانستان میں مشترکہ آپریشن کیا گیا۔
پاکستان کسٹمز ذرائع کے مطابق انٹرنیشنل نارکوٹکس بورڈ نے رپورٹ دی ہے کہ آیوڈین کے اس ذخیرے سے 4.5 ٹن منشیات تیار کی جاسکتی تھی۔
منشیات اور جرائم سے متعلق یونائیٹڈ نیشن آفس کی رپورٹ کے مطابق برآمد آیوڈین سے 91 ارب روپے کی منشیات تیار کی جاسکتی تھی، کاروائی میں 546 ملین ڈالر کا کیمیکل جرائم پیشہ افراد کے ہاتھ لگنے سے روکا گیا ہے۔
پاکستان کسٹم ذرائع کے مطابق کیمیکل سے منشیات بنانے سے حاصل آمدنی دہشت گردی میں استعمال کی جانی تھی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں