پنجاب میں گنے کی امدادی قیمت 200 روپے من مقرر کر دی گئی

پنجاب کابینہ نے گنے کی امداد ی قیمت 200 روپے من مقرر کرنے کی منظوری دے دی۔
وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کی زیر صدارت پنجاب کابینہ کا اجلاس ہوا جس میں ٹرانسپورٹیشن چارجز اور شوگر کین ڈویلپمنٹ سیس کی بھی منظوری دی گئی۔
کابینہ نے گنے کی امدادی قیمت 200 روپے من مقرر کرنے کی منظوری دی اور چینی کے نرخوں میں مزید کمی کے لیے اقدامات جاری رکھنے کا فیصلہ بھی کیا۔

کابینہ اجلاس میں وزیراعلیٰ پنجاب کی جانب سے مزید درآمدی چینی خریدنے کے لیے وزارتی کمیٹی تشکیل دینے کی ہدایت کی گئی جب کہ بروقت ادائیگیاں نہ کرنے والی شوگر ملوں کے خلاف کارروائی کا اعلان بھی کیا گیا ہے۔

دوسری جانب محکمہ خوراک کو پاسکو سے 63 ہزار ٹن درآمدی گندم خریدنے کے لیے معاہدہ کرنے کی اجازت دی گئی ہے۔
علاوہ ازیں کابینہ اجلاس میں نابینا افراد کے لیے ملازمتوں کے 3 فیصدکوٹے پر عملدرآمد یقینی بنانے کے ساتھ عمر میں مزید 5 سال رعایت دینے کی منظوری دی گئی ہے، نابینا افراد کو عمر میں مجموعی طورپر 15 سال تک رعایت حاصل ہو سکے گی۔
پنجاب ٹورازم، کلچر اینڈ ہیرٹج اتھارٹی بنانے کے لیے مسودہ قانون منظور کر لیا گیا جب کہ کوئلے کی کانوں کی لیز پر پابندی اٹھانے کا اصولی فیصلہ کیا گیا ہے۔
کابینہ نے میڈیکل ٹیچنگ انسٹی ٹیوٹ کا نوٹیفکیشن جاری کر نے اجازت دینے کے ساتھ ساتھ خواجہ صفدر میڈیکل کالج سیالکوٹ اور کنگ ایڈورڈ میڈیکل کالج پر ایم ٹی آئی ایکٹ کا اطلاق کرنے کی منظوری بھی دے دی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں