ملک بھر میں پولیو مہم کا آغاز ،والدین سے قطرے پلوانے کی اپیل

ملک بھر میں قومی انسداد پولیو مہم کا باقاعدہ آغاز ہوگیا، قومی انسداد پولیو مہم 21 سے 25 ستمبر تک جاری رہے گی، مہم میں 3 کروڑ 96 لاکھ بچوں کی ویکسینیشن ہوگی۔
تفصیلات کے مطابق قومی انسداد پولیو مہم کا باقاعدہ آغاز آج سے ہوگیا ہے ، قومی انسداد پولیو مہم 21 سے 25 ستمبر تک جاری رہے گی۔ مہم میں 3 روز اور 2 روز کیچ اپ ڈیز ہوں گے۔ کیچ اپ ڈیزمیں رہ جانے والے بچوں کی پولیو ویکسینیشن ہوگی۔
اور اس بات کی مکمل یقین دہانی کی جائے گی ، کہ پولیو سے کوئی بچہ محروم نہ رہے
قومی انسداد پولیو مہم آزاد کشمیر، گلگت بلتستان اور چاروں صوبوں میں ہوگی، مہم میں 3 کروڑ 96 لاکھ بچوں کی ویکسینیشن ہوگی جبکہ مہم میں 2 لاکھ 70 ہزار ورکرز حصہ لیں گے۔
ملک بھر میں 26 ہزار 384 ایریا انچارج، 8 ہزار 434 یو سی میڈیکل آفیسرز، 2 لاکھ 17 سو 99 موبائل، 10 ہزار 243 فکس اور 11 ہزار 714 ٹرانزٹ ٹیمز مہم کا حصہ ہوں گی۔
خیبر پختونخواہ
صوبہ خیبر پختونخواہ میں 5 روزہ انسداد پولیو مہم کے دوران 65 لاکھ سے زائد بچوں کو پولیو کے قطرے پلانے کا ہدف مقرر کیا گیا ہے۔ صوبے میں 28 ہزار 528 ٹیمیں مہم میں حصہ لیں گی۔
ای او سی حکام نے والدین سے انسداد پولیو مہم کو کامیاب بنانے کی اپیل کی ہے۔
خیبر پختونخواہ پولیو کیسز کی شرح کے حوالے سے پہلے نمبر پر رہا ہے، اب تک صوبے میں 22 پولیو کیسز سامنے آچکے ہیں۔
سندھ
صوبہ سندھ کے دارالحکومت کراچی کے علاقے بلدیہ ٹاؤن میں رورل ہیلتھ مرکز پر بچوں کو انسداد پولیو کے قطرے پلا کر، سندھ میں پولیو مہم کا آغاز کردیا گیا۔ کراچی میں سپر ہائی رسک یو سیز پرخصوصی توجہ دی جائے۔
صوبہ سندھ میں رواں برس 22 پولیو کیسز ریکارڈ کیے جاچکے ہیں۔
بلوچستان
صوبہ بلوچستان کے بھی تمام 33 اضلاع میں انسداد پولیو مہم کا آغاز کردیا گیا، 25 لاکھ بچوں کو پولیو سے بچاؤ کے قطرے پلانے کا ہدف مقرر کیا گیا ہے۔
صوبے میں انسداد پولیو مہم میں 10 ہزار 585 ٹیمیں حصہ لے رہی ہیں، رواں سال بلوچستان میں پولیو کے 19 کیسز رپورٹ ہوچکے ہیں۔
پنجاب
پنجاب میں ہونے والی انسداد پولیو مہم میں 2 کروڑ سے زائد بچوں کو قطرے پلانے کا ہدف مقرر کیا گیا ہے، انسداد پولیو مہم میں 44 ہزار ٹیمیں حصہ لے رہی ہیں۔
پنجاب پولیو پروگرام کا کہنا ہے کہ پولیو مہم میں طویل وقفوں سے وائرس بڑے شہروں میں پھیل رہا ہے۔ پنجاب میں رواں سال ریکارڈ پولیو کیسز کی تعداد 9 ہو چکی ہے۔ جبکہ ملک بھر میں رواں برس پولیو کے 72 کیسز رپورٹ ہو چکے ہیں۔ قومی انسداد پولیو پروگرام کی جانب سے کہا گیا ہے کہ والدین بچوں کو پولیو سے بچاؤ کے قطرے ضرور پلوائیں۔5 روزہ انسداد پولیو مہم کے دوران کرونا وائرس ایس او پیز پر سختی سے عملدر آمد ہوگا۔
جبکہ دوسری جانب وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر فیصل سلطان کا کہنا ہے کہ آج سے قومی انسداد پولیو مہم کا آغاز ہوگیا ہے، جس کے بعد والدین سے بھرپور تعاون کی اپیل ہے
تفصیلات کے مطابق انسداد پولیو مہم پر اپنے خصوصی ویڈیو پیغام میں ڈاکٹر فیصل سلطان نے کہا کہ مہم میں 2لاکھ70ہزار پولیوورکرز حصہ لے رہے ہیں، والدین بچوں کو پولیو سے بچاؤ کے قطرے ضرور پلائیں۔
انہوں نے والدین سے اپیل کی کہ مہم کے دوران انسدادپولیوٹیم سے بھرپور تعاون یقینی بنائیں۔ اور مل کر اس کا ملک سے خاتمہ کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں