کراچی میں آئی جی سمیت اعلیٰ افسران احتجاجاً چھٹیوں پر چلے گئے

کیپٹن (ر) صفدر کی گرفتاری کے بعد سندھ پولیس میں آئی جی رینک کے افسران نے دلبرداشتہ ہوکر چھٹیوں پر جانے کی تیاری کرلی۔
آئی جی سندھ پولیس مشتاق مہر آج دفتر نہیں آئے، وہ 15 روز کی چھٹیوں پر چلے گئے ہیں۔

دوسری جانب اسیپشل برانچ کے ایڈیشنل آئی جی عمران یعقوب نے بھی دو ماہ چھٹی کی درخواست دے دی جس میں انہوں نے مؤقف اختیار کیا کہ پولیس کے تمام افسران حالیہ واقعات کے بعد صدمے میں ہیں، ایسے ماحول میں کام نہیں کرسکتے
ذرائع کا کہنا ہے کہ انسپیکٹر جنرل کے دفتر میں آج اہم مٹینگ ہوئی تھی جس میں سندھ پولیس کے اعلیٰ افسران نے بھی شرکت کی تھی، اجلاس میں شریک تمام افسران نے وزیراعلیٰ‌ سندھ مراد علی شاہ کی پریس کانفرنس ایک ساتھ دیکھی تھی۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ ’پولیس افسران نے وزیراعلیٰ کی پریس کانفرنس کے بعد آپس میں معاملے پر مشاورت کی اور مشتاق مہر کا ساتھ دینے کا دو ٹوک فیصلہ کیا‘۔
ذرائع کے مطابق سندھ اور کراچی میں تعینات مزید پولیس افسران نے احتجاجاً چارج چھوڑنے کا فیصلہ کیا ہے۔

اس تمام واقعے کے بعد آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے کراچی میں پیش آنے والے کیپٹن (ر) صفدر کے واقعے کا بھی نوٹس لے لیا۔
پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے کراچی کے حالیہ واقعات کا نوٹس لے لیا، جنرل قمر جاوید باجوہ نے کور کمانڈر کراچی کو تمام واقعات کی تحقیقات کی ہدایت کرتے ہوئے فوری رپورٹ طلب کرلی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں