کورونا وائرس کے پاکستان پر وار جاری، نئے کیسز کی تعداد میں تیزی سے اضافہ ہو رہا ہے

پاکستان میں کورونا وائرس تیزی سے پھیل رہا ہے. اور اس مہلک وائرس سے متاثر ہونے والوں کی تعداد میں بھی مسلسل اضافہ ہو رہا ہے. اور اب تک پاکستان میں مجموعی طور پر 729 افراد میں اس وائرس کی تصدیق ہو چکی ہے. جن کا تعلق پاکستان کے مختلف صوبوں سے ہے. اس وائرس سے ہلاک ہونے والے افراد کی تعداد 3 ہے. جبکہ اب تک پانچ افراد اس وائرس سے صحت یاب ہو چکیں ہیں

آج پاکستان میں 234 نئے کیسز سامنے آئیں ہیں. جن میں سے سندھ میں 144، پنجاب میں 41 ،گلگت بلتستان میں 34، بلوچستان میں 10، خیبر پختونخوا میں 4 اور اسلام آباد سے ایک کیس رپورٹ ہوا ہے. جبکہ اسلام آباد میں آج ایک مریض صحت یاب بھی ہوا ہے. جس سے مجموعی طور پر صحت یاب ہونے والوں کی تعداد 5 ہو گئی ہے
کورونا وائرس کے پھیلاؤ کے پیش نظر حکومت پاکستان نے عوام سے اپیل کی ہے کہ وہ اپنے گھروں میں رہے. اور بلاضرورت گھر سے نہ نکلے. ماسک کا استعمال کریں اور ہاتھوں کو اچھی طرح دھویں. تاکہ اس وائرس سے دور رہا جا سکے. عوام کو بھی چاہیے کہ وہ میڈیا پر دی جانے والی معلومات سے خود کو آگاہ کریں اور احتیاطی تدابیر ضرور اختیار کریں. ہم سب کے تعاون سے ہی اس وائرس سے بچا جا سکتا ہے.
کورونا وائرس کی علامات میں کھانسی، چھینک آنا اور سانس کی کمی شامل ہے جب کہ کچھ مریضوں کو سر درد اور معدے کے مسائل کا بھی سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔ یہ وائرس ان افراد پر جلدی اثر انداز ہو سکتا ہے جن کا قوت مدافعت کمزور ہو لہذا اچھی خوراک کا استعمال کر کے ہم خود کو صحت مند اور اس وائرس سے دور رکھ سکتے ہیں

اب تک کورونا وائرس پر قابو پانے کے لیے کوئی ویکسین تیار نہیں کی گئی ہے اور نا ہی ہمارے پاس اس وائرس پر قابو پانے کے لیے کوئی دوائیاں ہیں۔لہذا احتیاط ہی اس سے بچاؤ کا واحد حل ہے

ڈاکٹرز نے لوگوں کو ہدایت جاری کی ہیں کہ (این نائن فائیو) ماسک کا استعمال کریں جو عام طور پر پاکستان میں اسموگ کے موسم میں استعمال کیا جاتا ہے

ماہرین کا کہنا ہے کہ کورونا وائرس سے ہونے والی بیماری انفلوئنزا یا فلو جیسی ہی ہے اور اس سے ابھی تک اموات کافی حد تک کم ہیں۔

عالمی ادارہ صحت کی سفارشات کے مطابق لوگوں کو بار بار صابن سے ہاتھ دھونے چاہئیں اور ماسک کا استعمال کرنا چاہیئے اور بیماری کی صورت میں ڈاکٹر کے مشورے سے ادویات استعمال کرنی چاہیئے

اپنا تبصرہ بھیجیں