پاکستان میں عالمی وبا کورونا وائرس کے کیسز میں یک دم کمی، عوام کی کیا رائے ہے ؟

پاکستان میں عالمی وبا کورونا وائرس کے کیسز میں کمی نے سازشی نظریات کو زندہ کر دیا ہے۔
عوامی آراء جاننے کے حوالے سے معروف ادارے گیلپ پاکستان نے ایک سروے مرتب کیا ، جس کے مطابق ہر 5 میں سے 3 پاکستانی کورونا کی حقیقت کو تسلیم کرنے سے انکار کرتے نظر آئے۔

گیلپ پاکستان کے حالیہ سروے کے مطابق کورونا کو مبالغہ آرائی قرار دینے والوں کی شرح بھی 55 فیصد سے 70 فیصد ہو گئی ہے جب کہ وائرس سے لاحق خطرات کو حقیقی سمجھنے والوں کی شرح بھی 41 فیصد سے کم ہو کر 26 فیصد پر آگئی ہے۔
سروے کے مطابق 54 فیصد پاکستانی اس نظریے کے بھی حامی نظر آئے کے وائرس لیبارٹری میں بنایا گیا ہے۔ اس کا حقیقت سے کوئی تعلق نہیں ہے
دوسری جانب ماہرین کا کہنا ہے کہ احتیاطی تدابیر چھوڑنے سے کورونا وائرس کی دوسری لہر کا سامنا کرنا پڑسکتا ہے، اس بارے میں حکومت نے عوام کو کئی بار خبردار کیا ہے
گیلپ پاکستان کے حالیہ سروے کے مطابق وائرس کی دوسری لہر کے خدشات کے باوجود کورونا کی وبا کو مکمل قابو میں سمجھنے والے افراد کی شرح گزشتہ سروے کے مقابلے میں 32 فیصد اضافے کے بعد 79 فیصد ہوگئی ہے۔
سروے میں کہا گیا ہے کہ وبا کو قابو میں نہ سمجھنے والے افراد کی شرح 45 فیصد سے کم ہوکر 15 فیصد پر آگئی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں