کراچی میں بجلی کی طویل لوڈ شیڈنگ کے بعد گیس میں بندش بھی شدت اختیار کر گئی

گیس پریشر میں کمی کراچی میں بجلی کی طویل بندش کا نیا بن گیا، بجلی کے بعد اب کراچی میں گیس کا بھی بڑا بحران آ گیا .جس کے بعد متعدد علاقوں‌میں گیس پریشر کم یا نہ ہونے کے برابر ہے .کراچی میں گیس کی فراہمی معمول پر نہ آسکی جس کے باعث سندھ بھر میں سی این جی اسٹیشنز بھی بند ہیں‌
سوئی سدرن نے اتوار کو گیس کی فراہمی ایک دو دن میں معمول پر آنے کا دعویٰ کیا تھا لیکن کمپنی کے دعوے کے باوجود شہر میں گیس کی فراہمی بھی معمول پر نہیں آسکی ہے جس سے نہ صرف کے الیکٹرک گیس کی کمی کا بہانہ بناکر لوڈشیڈنگ کررہی ہے بلکہ گیس کی قلت سے گھریلو صارفین بھی شدید پریشانی کا شکار ہیں۔
دوسری جانب بجلی کی بندش سے نیو کراچی، لیاری، کھارادر، اور لانڈھی، ملیر سمیت متعدد علاقے اندھیرے میں‌ڈوبے ہوئے ہیں ، اور لوڈ شیڈنگ کا دورانیہ 12 سے 14 گھنٹے تک پہنچ گیا ہے۔ رات رات بھر بجلی غائب کی جانے لگی، لیاقت آباد سی ون ایریا کا عالم یہ ہے کہ گزشتہ 60 گھنٹوں سے بجلی بند ہے۔
لوڈ شیڈنگ سے مستثنیٰ علاقوں میں بھی 6 گھنٹے سے زائد تک لوڈ شیڈنگ ہو رہی ہے۔ ان میں ڈیفنس، کلفٹن، گلشن اقبال، گلستان جوہر، ایف بی ایریا کے مختلف بلاکس،گارڈن ویسٹ اور دیگر علاقے شامل ہیں۔
ترجمان کے الیکٹرک کے مطابق کم گیس پریشر کے باعث 400 میگاواٹ بجلی کی فراہمی متاثر ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں