زمین نگل گئی یا آسمان کھا گیا، سترہ روز گزر جانے کے باوجود ملزم عابد پولیس کی گرفت سے دور

گجرپورہ لنک روڈ زیادتی کیس میں آٹھ اسپیشل ٹیمیں بھی مرکزی ملزم عابد کا سراغ نہ لگا سکیں ، ملزم پولیس کو3 بار چکما دیکر فرار ہو چکا ہے۔
تفصیلات کے مطابق گجرپورہ لنک روڈ زیادتی کیس کا مرکزی ملزم عابد سترہ روز بعد بھی گرفتار نہ ہوسکا، عابد کو گرفتار کرنے کے لیے 8 اسپیشل ٹیمیں کام کررہی ہیں ، ٹیموں میں سی ٹی ڈی،اسپیشل برانچ اورکوئیک رسپانس فورس کےاہلکارشامل ہیں تاہم آٹھ اسپیشل ٹیمیں بھی مرکزی ملزم عابد کا سراغ نہ لگا سکیں۔

ملزم عابد پولیس کو3 بار چکما دیکر فرارہوچکاہے ، پولیس نےملزم عابدکوبلیک لسٹ میں بھی شامل کررکھاہے جبکہ ملزم عابد اور اس کی بیوی کا شناختی کارڈبلاک کرا دیا ہے۔

پولیس کا کہنا ہے کہ ملزم عابدقصور،ننکانہ اورشیخوپورہ سے پولیس کوچکمادیکرفرارہوا، ملزم کی اطلاع دینے والے کو 25لاکھ روپے انعام دینےکااعلان کیا گیا ہے۔ لیکن تاحآل پولیس ابھی تک اس کو پکڑنے میں کامیاب نہیں‌ہوئی

پولیس ذرائع کے مطابق پولیس نے ملزم کی گرفتاری کے لئے کچے کے علاقوں میں بھی مخبری کا نیٹ ورک تیز کر دیا ہے، کیس کا مرکزی ملزم شفقت پولیس کے پاس چودہ روزہ ریمانڈ پر ہے۔

پولیس نے مرکزی ملزم عابد علی کے خلاف گھیرا تنگ کرنے کے لئے پمفلٹ تیار کر کے اس کی تلاش کر رہے ہیں، صوبائی سطح پر مختلف صوبوں میں پولیس نے عابد علی کی تصاویر اور پمفلٹس اور حلیہ جات فراہم کردئیے ہیں جبکہ پولیس قبائلی علاقوں میں بھی ملزم کی گرفتاری کےلیے رابطے میں ہے۔
گرفتار شفقت علی اور دیگر ملزمان جن میں عابد کی بیوی،سالی دوقریبی عزیز،عابد کا ساتھی بالامستری سے تفتیش جاری ہے جبکہ شفقت اعتراف جرم بھی کرچکا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں