کراچی پولیس مقابلے میں سب انسپکٹر شہید، 4 ملزمان زخمی

کراچی کے علاقے گلستان جوہر میں پولیس مقابلے کے دوران سب انسپکٹر شہید ہو گیا جب کہ پولیس کی فائرنگ سے 4 ملزمان زخمی بھی ہوئے۔
کراچی میں ملزمان اور پولیس کے درمیان گلستان جوہر اور فیروز آباد میں دو جگہ مقابلہ ہوا جہاں گلستان جوہر میں ملزمان کی فائرنگ سے پولیس کا سب انسپکٹر شہید ہوا ہے
پولیس کے مطابق گلستان جوہر میں پولیس انسپکٹر کو شہید کرنے والے ملزمان نے پہلے فیروز آباد سے ایک گاڑی چوری کی جہاں ان کا پولیس سے مقابلہ بھی ہوا۔ اس حؤالے سے ایک ویڈیو بھی سامنے آئی ہے جس میں ملزمان کا پولیس سے فائرنگ کا تبادلہ دیکھا جا سکتا ہے۔
سی سی ٹی وی میں ملزمان سفید رنگ کی گاڑی سے پولیس پر فائرنگ کرتے دیکھے جا سکتے ہیں، ویڈیو میں ملزمان کو فائرنگ کے بعد فرار ہوتے دیکھا جا سکتا ہے۔
پولیس کا کہنا ہے کہ ملزمان نے جس سفید کار سے فائرنگ کی وہ 2 روز قبل چوری کی گئی تھی، فیروزآباد میں مقابلے کے وقت ملزمان چھینی گئی وائٹ کار میں سوار تھے، ملزمان کو جب پولیس نے گلستان جوہر میں روکا تو انہوں نے فائرنگ کر دی جس سے ایڈیشنل ایس ایچ او رحیم خان شہید ہو گئے۔
پولیس حکام کا بتانا ہے کہ ٹریکر کے باعث ملزمان کی چھینی ہوئی سفید کار گلستان جوہر کامران چورنگی پر خراب ہوئی تو ملزمان نے کامران چورنگی پر ایک اور کار چھینی اور فرار ہو گئے۔

پولیس کے مطابق اہلکاروں نے ایک مشتبہ گاڑی کو روکنے کی کوشش کی تو ملزمان فرار ہوگئے، پولیس موبائل نے ملزمان کا پیچھا کیا جس پر ملزمان نے چلتی گاڑی سے فائرنگ کر دی۔ گاڑی سے پولیس پر ایس ایم جی سے فائر ہوئے۔
حکام کا کہنا ہے خیال ہے کہ گاڑی کے اندر پولیس کی وردی پہنے ایک اہلکار موجود ہے، ایس ایم جی سے فائرنگ کرنے والا تربیت یافتہ لگتا ہے۔ ایس ایس پی ایسٹ ساجد سدوزئی نے بتایا کہ شہید سب انسپکٹر رحیم خان گلستان جوہر تھانے میں میں ایڈیشنل ایس ایچ او تعینات تھا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں