لاک ڈاؤن کا پہلا روز ، کہی دکانیں کھلی تو کہی بند

گزشتہ روز لاک ڈاؤن کے فیصلے کے بعد پنجاب میں آج سے بازار اور شاپنگ مالز بند رکھنے کا حکم دیا گیا ہے . جس پر کہی تو عمل ہو رہا ہے لیکن کہی دکاندار اپنی من مانی کرتے نظر آ رہے ہیں . جس پر پولیس ایکشن لے رہی ہے
تفصیلات کے مطابق پنجاب میں آج سے 5 اگست تک تمام کاروباری مراکز بند رکھنے کا اعلان کیا گیا ہے .اور سخت لاک ڈاون پر عملدرآمد یقینی بنانے کا کہا گیا ہے .فیصلے پر عمل کرتے ہوئے گوجرانوالہ میں سیٹلائٹ ٹاؤن اور ماڈل ٹاؤن جب کہ پیپلز کالونی مارکیٹ سمیت اندرون شہر کی مختلف مارکیٹیں بند کروادی گئیں۔
مارکیٹیں اور بازار بند کرنے کا فیصلہ گزشتہ روز وزیر قانون پنجاب راجہ بشارت کی زیر صدارت ہونے والےکابینہ کمیٹی برائے انسداد کورونا کے اجلاس میں کیا گیا۔
وزیر اطلاعات پنجاب فیاض الحسن چوہان کا کہنا تھا کہ 5 اگست تک عید الفطر والے ایس او پیز کا نفاذ اس عید پر بھی ہو گا، تھیٹر، ریسٹورنٹس اور تفریحی مقامات کھولنے کا معاملہ محرم الحرام کے بعد دیکھا جائے گا۔
لاک ڈاؤن کے دوران میڈیکل، گروسری اسٹور، ٹرانسپورٹ اور دفاتر کھلے رہیں گے۔

دوسری جانب لاہور، ملتان اور لودھراں سمیت پنجاب کی مختلف تاجر تنظیموں نے پنجاب حکومت کے لاک ڈاؤن فیصلے کو مسترد کرتے ہوئے کاروبار کھولنے کا اعلان کیا ہے۔ جس کے بعد کئی تاجروں نے دکانیں کھولی بھی ہیں .

اپنا تبصرہ بھیجیں