عمرہ زائرین کے لیے نئی ہدایات جاری

سعودی وزارت حج و عمرہ نے کہا ہے کہ زائرین کو عمرہ ادائیگی سے قبل ریاست میں داخل ہونے بعد میڈیکل آئسولیشن میں رہنا پڑے گا۔
غیر ملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق خلیجی ریاست سعودی عرب کے نائب وزیر حج و عمرہ ڈاکٹر عبدالفتاح مشاط نے عمرہ ادائیگی سے متعلق جاری بیان میں کہا کہ کرونا وبا کے باعث عمرہ زائرن کو چار مرحلوں سے گزرنا پڑے گا۔

ڈاکٹرعبدالفتاح کا کہنا تھا کہ عمرہ زائرین کے لیے مکہ مکرمہ میں ہوٹل مختص کردئیے گئے ہیں جس کے دس فیصد کمرے ایسے ہوں گے جو کرونا مثبت آنے کے شبے میں مبتلا زائرین کےلیے ہوں گے۔
انہوں نے کہا کہ سعودی عرب تمام زائرین کو مکمل انشورنس سروس کے تحت علاج کی سہولت فراہم کرے گا۔
سعودی نائب وزیر کا کہنا تھا کہ ہر گروپ میں 3300 تک عمرہ زائرین ہوں گے اور ہر گروپ کو مسجد الحرام میں تین گھنٹے تک عمرہ کا موقع دیا جائے گا۔
سعودی وزارت حج و عمرہ نے کہا کہ ریاست ہر ملک سے آنے والے زائرین کو خوش آمدید کہتا ہے کہ لیکن اب صرف ممالک کے زائرین کو آنے کی اجازت ہوگی جہاں وائرس کے خطرات کا تناسب کم ہوگا جبکہ عمرہ کرنے والے زائرین کی عمر بھی 18 سے 50 برس کے درمیان ہونی چاہیے۔

انہوں نے کہا کہ عمرہ زائرین کےلیے یہ بھی شرط ہے کہ وہاں آنے والے افراد لاعلاج امراض سے پاک ہو اور پی سی آرسرٹیفکیٹ دکھائے بصورت دیگر ویزا نہیں ملے گا۔
اس کے علاوہ سعودی وزارت حج و عمرہ نے مکہ مکرمہ میں بیرون مملکت سے آنے والے عمرہ زائرین کے سفری ضوابط مقرر کیے ہیں، بسوں کی جنرل سنڈیکیٹ کو وزارت صحت کی جانب سے مقرر حفاظتی تدابیر کی پابندی کی ہدایت کی گئی ہے۔
سعودی ذرائع ابلاغ کے مطابق بسوں کی جنرل سنڈیکیٹ سے کہا گیا ہے کہ5 برس سے زیادہ پرانی کوئی بھی بس عمرہ زائرین کو لانے لے جانے کے لیے استعمال نہ کی جائے۔
عمرہ زائرین کی ہر بس خود کار نگرانی کے نظام سے آراستہ ہو۔ شاہراہوں پر بس سروس کی سہولت مہیا ہو۔ ہر بس کا ایک ڈرائیور اور ایک اس کا ہیلپر ہو۔

کسی بھی بس ڈرائیور یا ہیلپر کی ڈیوٹی کا دورانیہ آٹھ گھنٹے سے زیادہ کا نہ ہو۔ ڈرائیور اور ہیلپر متعلقہ ادارے سے اجازت نامہ حاصل کرے۔ وزارت حج و عمرہ بسوں کے حوالے سے مزید پابندی لگا سکتی ہے۔
اس کے علاوہ بس کے روٹ، منزل اور عمرہ زائرین کے ناموں کی فہرست تیار کی جائے جس میں ڈرائیور اور ہیلپر کا نام بھی درج ہو۔ تمام ٹرانسپورٹ کارکنان کو حفاظتی تدابیر کی تربیت دی جائے اوربسوں میں سینیٹائزر فراہم کیے جائیں۔ کسی بھی بس میں اس کی
پچاس فیصد سے زیادہ گنجائش نہ استعمال کی جائے، عمرہ زائرین کے لیے بسیں مختص ہوں، ان کی بسوں سے کوئی اور کام نہ لیا جائے۔
مکہ مکرمہ محکمہ ٹریفک نے مسجدالحرام کے اطراف بارہ چیک پوسٹیں قائم کی ہیں جہاں عمرہ زائرین اور نمازیوں کے اجازت نامے چیک کیے جارہے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں