آج چاند کو سال کا آخری گرہن لگے گا

محکمہ موسمیات کا کہنا ہے کہ رواں سال کا چوتھا اور آخری چاند گرہن آج ہوگا، لیکن یہ چاند گرہن پاکستان میں کہیں نہیں دیکھا جاسکے گا۔
تفصیلات کے مطابق محکمہ موسمیات کا کہنا ہے کہ رواں سال کے چوتھے اور آخری چاند گرہن کا آغاز 30 نومبر دوپہر 12 بجکر 32 منٹ پر ہوگا، چاند گرہن 2 بجکر 42 منٹ پر اپنے عروج پر ہوگا۔ چاند گرہن کا اختتام 4 بجکر 53 منٹ پر ہوگا جس کا دورانیہ 4 گھنٹے اور 21 منٹ ہوگا۔

محکمہ موسمیات کے مطابق چاند گرہن پاکستان میں کہیں نہیں دیکھا جاسکے گا، بلکہ یہ امریکا، آسٹریلیا اور ایشیا میں دیکھا جاسکے گا۔

محکمہ موسمیات کا کہنا ہے کہ یہ چاند گرہن کی تیسری قسم ہے جسے ’پنمبرل‘ کہا جاتا ہے، یہ جزوی اور مکمل چاند گرہن سے مختلف ہوتا ہے اس میں چاند پورا چھپتا نہیں بلکہ اس کی روشنی مدھم ہوجاتی ہے۔

چاند گرہن کیا ہے؟
زمین کا وہ سایہ جو گردش کے دوران کرہ زمین کے چاند اور سورج کے درمیان آ جانے سے چاند کی سطح پر پڑتا ہے اور چاند تاریک نظر آنے لگتا ہے، اُسے چاند گرہن کہتے ہیں۔

چاند گرہن کی اقسام

مکمل چاند گرہن
جزوی چاند گرہن

چاند گرہن کبھی جزوی ہوتا ہے اور کبھی پورا کیونکہ یہ اس کی گردش پر منحصر ہوتا ہے، چونکہ زمین اور چاند دونوں سورج سے روشنی حاصل کرتے ہیں اس لیے زمین سورج کے گرد اپنے مقررہ مدار پر گھومتی ہے اور چاند زمین کے گرد اپنے مدار پر گھومتا ہے۔
چاند اور زمین کا سایہ سورج کے درمیان میں سال میں دوبار آتا ہے اور اس کا سایہ ایک دوسرے پر پڑتا ہے، چاند پر سایہ پڑتا ہے تو چاند گرہن اور سورج پر پڑتا ہے تو زمین پر سورج گرہن دکھائی دیتا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں